255

کب دواؤں کامحتاج ھوتاھے
عشق…….لاعلاج ھوتاھے

اس کےاپنےاصول ھوتےھیں
اس کا اپنارواج ھوتا ھے

عشق کےعین سےعبادت ھے
عشق رُوح..کااناج ھوتا ھے

عشق جسموں کو..سر نہیں کرتا
اس کاذھنوں پہ راج ھوتاھے

عشق میں شاہ..فقیرھوتےھیں
عشق… کانٹوں کاتاج ھوتاھے

عشق میں کوئی حدنہیں ھوتی
عشق میں کل نہ آج ھوتاھے

عشق خودھی ظلم کرتاھے
عشق خودھی…احتجاج ھوتاھے

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here